He Sharat Is Me Khamosh Hona - Puzzle No. 593

ہے شرط اس میں خاموش ہونا

he sharat is me khamosh hona

مزید پہیلیاں

کوئی نہ دیکھے اور دکھلائے

Koi Na Dekh Or Dikhaye

ایک کھیتی کی شان نرالی

Ek Kheti Ki Shaan Nirali

ڈبیا سے نکلا جس نے بھی کھولی

Dibya Se Nikla Jis Ne Bhi Kholi

کالے کو جب تائو آئے دیکھو اس کا کام

Kaly Ko Jab Tawo Aye Dkho Uska Kam

بے شک پاؤں‌ کے نیچے آئیں

Beshak Paon Ke Neeche Aaye

سر پر ڈال کے تپتی دھوپ

Sar Per Daal K Tapti Dhoop

اجلا پنڈا رنگ نہ لباس

Ujla Pinda Rang Na Libaas

نگر نگر مکے چکر کاٹے

Nagar Nagar Mukky Chakkar Kate

سر کے بل چلتا ہے فرفر

Sar Ke Baal Chalta Hy Far Far

بنے ہوئے ہیں ایسے دو گھر

Bane Huye Hain Aisy Do Ghar

رہتی ہے وہ ڈھیلی ڈھالی

Rehti Hai Wo Dheeli Dhali

پہنچ جائے انساں خدا کے جو گھر

Pahunch Jaye Insan Khud Ke Jo Ghar

Your Thoughts and Comments