Doodh Wala

دودھ والا

ایک عورت ہر سال اپنی سالگرہ پر گانا گایا کرتی تھی۔ ایک دفعہ جب وہ رات کو اپنی سالگرہ پر گانا گارہی تھی ۔ اس کا گانا بہت لمبا تھا۔ آخر جب وہ گانا ختم کرنے لگی۔ تو اس کے آخری بول یہ تھے۔ ”یہ کون آیا … یہ کون آیا؟“ اس وقت صبح کے چار بج رہے تھے۔ تو باہر سے یہ آواز آئی۔ ”دودھ والا آیا جی۔ “

Your Thoughts and Comments