Lift

لفٹ

لفٹ میں ایک ساتھ بہت سے لوگ سوار ہو گئے۔ آپریٹر نے بٹن دبایا لیکن لفٹ اپنی جگہ نہ ہلی۔ اس نے درخواست کی کم از کم ایک فرد لفٹ سے اتر جائے۔ ایک نہایت موٹی خاتون نے ایثار کا مظاہرہ کیا اور لفٹ سے اتر گئیں۔ کئی دوسرے لوگ اب بھی باہر ہی اپنی باری کے انتظار میں کھڑے تھے۔ آپریٹر نے دوبارہ بٹن دبایا تو لفٹ واقعی اوپر روانہ ہو گئی۔ موٹی خاتون نے دوسرے لوگوں کی طرف دیکھتے ہوئے قدرے شرمندگی سے کہا۔ ”میرا وزن اتنا زیادہ نہیں کہ لفٹ میری وجہ سے رک جاتی دراصل آج میرے ذہن پر بوجھ بہت زیادہ ہے۔

Your Thoughts and Comments