Delhi Punche Dhaka Punche Ja Punche Qandhar - Puzzle No. 668

دہلی پہنچے ڈھاکہ پنچے جا پہنچے قندھار

delhi punche dhaka punche ja punche qandhar

مزید پہیلیاں

لکھنے کا ہے ڈھنگ نرالا

Likhne Ka Hai Dhang Nirala

اک ہے چیز بڑی انمول

Ek Hi Cheez Badi Anmol

جانے بوجھے ایک خدائی

Jany Bojhy Ek Khudai

شیشے کا گھر لوہے کا در

Sheeshay Ka Ghar Lohe Ka Dar

کھڑی رہے تو بیٹھے کب

Khari Rahe To Bethy Kab

اپنے دیس میں‌ پلی پلائی

Apne Dais Me Pali Palai

سب سے تیز اس کی رفتار

Sabse Tez Uski Raftaar

ایک استاد ایسا کہلائے

Ek Ustad Aisa Kehlaye

گلا تو ہے سر ساتھ نہیں‌ ہے

Gala Tu Hy Sar Sath Nahi He

بے شک پاؤں‌ کے نیچے آئیں

Beshak Paon Ke Neeche Aaye

ایسا نہ ہو کہ کام بگاڑے

Aisa Na Ho K Kam Bigary

جاگو تو وہ پاس نہ آئے

Jagu Tu Wo Paas Na Aaye

Your Thoughts and Comments