بند کریں
بدھ اپریل

مزید مضامین

حالیہ تبصرے

اویس رضا 30-03-2018 12:41:06

مجھے شامی کے موبائل اچھے لگتے ہیں اور اردو پوائنٹ کی خبریں آسان اور اردو میں ہوتی ہیں، آسان ویپ سائیڈ ہے ٹیکنالوجی ٹپش تیمور میری ویب سائیڈ ہے

  مضمون دیکھئیے
dr anwar kama ch 06-03-2018 15:26:22

very fruit full

  مضمون دیکھئیے
Ar. Tauseef Amjad Meer. 25-01-2018 11:30:55

Its IT Technology day by day improvements, thank you for acknlowdge publicly awareness

  مضمون دیکھئیے
Shafiq rehman 31-08-2017 11:15:33

Agr yh Sach Hai to Boht hii A6i Khabr Hai Agr fake hai to Fitty Muh

  مضمون دیکھئیے
muhammad ather 11-08-2017 14:28:02

mjhe technology sikhne ka bht shok he sir

  مضمون دیکھئیے
Syed Mudasar Hassan Shah 12-06-2017 11:15:24

good news

  مضمون دیکھئیے
سام سنگ نے 146 انچ کا ٹی وی”دی وال“ متعارف کرا دیا
یہ دنیا کا پہلا ماڈیولر مائیکروایل ای ڈی ٹی وی ہے

سام سنگ نے ”دی وال“(The Wall) کے نام سے 146 انچ کا ٹی وی متعارف کرایا ہے۔ یہ دنیا کا پہلا ماڈیولر مائیکروایل ای ڈی ٹی وی ہے۔
مائیکروایل ای ڈی(MicroLED ) وہ ٹیکنالوجی ہے ، جو مستقبل میں فون اور دوسرے ڈسپلے میں او ایل ای ڈی کی جگہ لے گی۔اس میں بھی اس کے ہر پکسل کی اپنی لائٹ ہوتی ہے اس لیے یہ اس میں بلیک لیول بہت بہترین ہوتا۔اس کے علاوہ یہ او ایل ای ڈی ڈسپلے سے زیادہ پائیدار ہوتی ہے۔


سام سنگ نے دی وال بنانے کے لیے مائیکروسکیل ایل ای ڈیز کا استعمال کیا ہے، جو موجودہ دستیاب ایل ای ڈیز سے کافی چھوٹے ہیں۔ یہ لائٹ کے چھوٹے پوائنٹس ایک بڑا ٹی وی بناتے ہیں لیکن چونکہ اس ڈیزائن ماڈیولر ہے ، اس لیے سام سنگ بہت تیزی سے چھوٹے ٹی وی کو جوڑ دیتا ہے۔
سام سنگ نے اس کے 2018 کے چند ماڈلز بھی دکھائے ہیں۔ان میں ایک8K AI ٹیکنالوجی کے ساتھ QLED TV بھی ہے۔ یہ ٹی وی اس سال کی دوسری سہ ماہی میں کوریا اور امریکا میں فروخت کیا جائے گا۔ اس کے بعد اسے پوری دنیا میں فراہم کیا جائے گا۔
2018میں متعارف کرائے جانے والے ٹی وی میں سام سنگ بکسبی سپورٹ اور SmartThings انٹی گریشن بھی متعارف کرا سکتاہے۔

یہ خبر اُردو پوائنٹ پر شائع کی گئی۔ خبر کی مزید تفصیل پڑھنے کیلئے کلک کیجئے
تاریخ اشاعت: 2018-01-09

: متعلقہ عنوان

مینوفیکچرر کا نام     :     سام سنگ

سام سنگ کے مزید عنوان پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

متعلقہ مضامین