X

ڈیڈ لائن ختم، نمک میں ملاوٹ کرنے والوں کے خلاف صوبہ بھر میں کریک ڈائون

, کل 264 فیکٹریوں کی چیکنگ ، آئیوڈین نہ شامل کرنے پر9 سربمہر، ناقص انتظامات پر164کو وارننگ نوٹس جاری , تما م سالٹ کمپنیوں کو نومبر میں نومبر میں فوڈ اتھارٹی نی15فروری کی حتمی ڈیڈ لائن جاری کی تھی , نمک خوراک کا بنیادی جزو ہے،نمک میں آئیوڈین شامل کرنا لازم ہے :ڈی جی فوڈ اتھارٹی , نمک میں آئیوڈین کی لازمی شمولیت سے غذائی اجزاء کی کمی پر قابو پانے میں مدد ملے گی :نور الامین مینگل

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 مارچ2018ء) آئیوڈین شامل کئے بغیر نمک پراسس کرنے والی کمپنیوں کوپنجاب فوڈ اتھارٹی کی طرف سے دی گئی ڈیڈ لائن ختم ۔پنجاب فوڈ اتھارٹی کا نمک میں ملاوٹ کرنے والوں کے خلاف صوبہ بھر میں کریک ڈائون جاری،لاہور ریجن میں 3 راولپنڈی میں 4 جبکہ ملتان ریجن میں 2 نمک فیکٹریاں سیل کی گئیں۔ تفصیلات کے مطابق نمک پراسس کرنے والی کمپنیوں کوپنجاب فوڈ اتھارٹی کی طرف سے دی گئی ڈیڈ لائن ختم ہونے پر صوبہ بھر میں264 فیکٹریوں کی چیکنگ کی گئی۔

چیکنگ کے دوران آئیوڈین نہ شامل کرنے پر لاہور ریجن میں 3 راولپنڈی میں 4 جبکہ ملتان ریجن میں 2فیکٹریاں سیل کی گئیں جبکہ صٖفائی اورگرائینڈنگ کے ناقص انتظامات پر164 فیکٹریوں کو وارننگ نوٹس جاری کیے گئے۔یاد رہے گزشتہ سال نومبر میں ڈی جی فوڈ اتھارٹی نے تمام سالٹ کمپنیوںکے نمائندوں سے ملاقات کی اوراس حوالے سے آئیوڈین شامل کیے بغیر نمک کی تیاری بند کرنے کے لیی15 فروری کی ڈیڈ لائن دی گئی تھی۔

اس حوالے سے ڈی جی فوڈ اتھارٹی نورالامین مینگل کا کہنا تھا کہ ڈیڈ لائن ختم ہونے کے بعد بھی بہتری کے لیے ایک ماہ تک وارننگ نوٹس جاری کیے گئے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ خالص، صاف ستھرا آئیوڈین ملا نمک خوراک کا اہم ترین جزو ہے اور نمک کا معیاری ہونا بہت ضروری ہے۔پنجاب میں 60 فی صد آبادی مختلف غذائی اجزاء کی کمی کا شکار ہیںاس لئے نمک میں آئیوڈین سمیت تمام ضروری اجزاء کی شمولیت لازم ہے۔نمک میں آئیوڈین، منرل اور دیگر اجزاء کی شمولیت سے غذائی اجزاء کی کمی پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔ ڈی جی فوڈ اتھارٹی نے واضح کیا کہ نمک کے علاوہ گھی،آٹا اور کوکنگ آئل کی بھی لازمی فوڈ فیکشن کروا رہے ہیں۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں