Karobar - Joke No. 1940

کاروبار - لطیفہ نمبر 1940

پرنام سنگھ، گورنام سنگھ اور ان کے دو دوستوں نے گاؤں میں اپنی زمین بیچی اور شہر میں ہوٹل بنانے کا فیصلہ کیا۔ انہوں نے شہر میں بہترین جگہ پر عالی شان ہوٹل بنایا مگر ایک مہینے تک ان کے ہوٹل میں ایک گاہک بھی نہ گھسا، کیوں؟ اس لئے کہ چاروں نے”پنڈ“ سے لا کر اپنے چار بوہلی کتے بھی ہوٹل کے دروازے پر باندھ دئیے تھے! پھر چاروں نے ہوٹل بیچ کر گاڑیاں مرمت کرنے کا گیراج بنانے کا فیصلہ کیا۔ ورکشاپ بنائی، ہر قسم کی مشینری لگائی، مگر ایک مہینے تک کوئی گاہک ان کے گیراج میں گاڑی مرمت کرانے نہ آیا! کیوں؟ اس لئے کہ انہوں نے گیراج دوسری منزل پر بنایا تھا! گیراج بیچ کر چاروں دوستوں نے ٹیکسی خریدی… ایک ماہ تک سڑکوں پر مارے مارے پھرتے رہے مگر کوئی آدمی ان کی ٹیکسی میں نہ بیٹھا۔ کیوں؟ اس لئے کہ چاروں سر دار ہر وقت اپنی ٹیکسی میں ہی سوار رہتے تھے! تنگ آکر سرداروں نے ٹیکسی سمندر میں پھینکنے کا فیصلہ کیا، سارا دن وہ ٹیکسی سمندر میں دھکیلنے کے لئے زور لگاتے رہے مگر ٹیکسی اپنی جگہ سے نہ ہلی! کیوں؟ اس لئے کہ دو آگے سے اور دو پیچھے ٹیکسی کو دھکا لگا رہے تھے!

مزید لطیفے

بھکاری بس سٹاپ پر

Bhikaar bus stop per

شرافت

sharafat

لمبا سفر

Lamba Safar

ایک دوست

Aik dost

بلیک بورڈ

blackboard

ایک شخص

Aik shakhs

انشااللہ

Inshallah

راہ گیر

Rah Geer

باپ بیٹے سے

Baap bete se

نوکر مالک سے

naukar Malik se

میں اپنے بھائی سے

mein apne bhai se

بینک نمبر تین

Bank No 3

Your Thoughts and Comments