Master Sahib - Joke No. 1060

ماسٹر صاحب - لطیفہ نمبر 1060

ماسٹر صاحب نے لڑکوں کو سوال کھایا۔ ”دل کی شکل بنا کر اس کے کام بتائیں۔“ ایک لڑکے نے سوال حل کرنے کے بعد کاپی ماسٹر صاحب کو دکھائی۔ لکھا تھا۔ ”دل ایک نازک چیز ہے۔ یہ لینے دینے کے بھی کام آتا ہے اگر ٹوٹ جائے تو ہرگز نہیں جڑتا۔ اگر کسی کی یاد آ جائے تو بہت بیقرار ہو جاتا ہے۔ نیز یہ خون کے آنسو بھی روتا ہے۔“

مزید لطیفے

ادریس حنیف سے

Idrees Hanif se

ماں بیٹے سے

Maa bete se

بازار میں ایک صاحب

Bazaar main aik sahib

مالک مکان کرائے دار

Malik Makan Karaye dar

مالی بچے سے

Maali bachy se

ماہر نفسیات

mahir e nafsiyat

جج

Judge

مجسٹریٹ

Magistrate

شاہجہان کی وفات

shahjahan ki wafat

سر کے بال

sir ke baal

ائر کنڈیشنڈ مرغ

air conditioner murgha

ایک چالاک لڑکی

aik chalak larki

Your Thoughts and Comments