Professor Ka Khayal

پروفیسر کا خیال

میرے پروفیسر کا خیال تھا کہ ہم لوگ بعض اوقات دوسروں سے بڑی بڑی توقعات وابستہ کرلیتے ہیں اور جب وہ توقعات پوری نہیں ہوتیں تو خواہ مخواہ دل میلا کر لیتے ہیں۔ اسی طرح بعض لوگ بھی دوسروں کو اپنا بنانے کے لئے تارے تک توڑ کے لانے کا یقین دلاتے ہیں۔ یہ کہہ کر اس نے ایک لڑکی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا۔ ”اگر خدا نہ کرے تمہارے دفتر میں آگ لگ جائے اور تمہارے بوائے فرینڈ کو پتہ چل جائے کہ تم اندر ہو تو کیا وہ جلتی ہوئی عمارت سے تمہیں نکالنے کے لئے اندر کود جائے گا؟“ ”ضرور۔“ لڑکی نے جواب دیا۔ ”میرا بوائے فرینڈ فائر مین ہے!“

Your Thoughts and Comments