University - Joke No. 948

یونیورسٹی - لطیفہ نمبر 948

”ڈیئر! آج ہم یونیورسٹی سے چھٹی کرتے ہیں آج میرا دل تم سے باتیں کرنے کو چاہ رہا ہے۔ ہم آج شہر سے باہر جائیں گے اس جگہ نہ گاڑیوں کا شور ہو نہ لوگوں کا ہجوم‘ اور جہاں تمہارے ڈیڈی کا خوف ہو نہ میرے والد گا ڈر۔ تمہارے اور میرے علاوہ کوئی نہ ہو۔“ ”لیکن تم وہاں مجھے چھیڑو گے تو نہیں؟“ لڑکی نے سوال کیا۔ ”بالکل بھی نہیں“ لڑکے نے جلدی سے جواب دیا۔ ”تو پھر وہاں جانے کا کیا فائدہ“ لڑکی بیزار ہو کر بولی۔

مزید لطیفے

ایک آدمی

Aik Admi

ایک بے وقوف بول

aik bewaqoof bol

پہلا طالبعلم

pehla talib e ilm

سردار جی

Sardar jee

اداکار

adakaar

ظلم اور زیادتی

zulm aur zyadti

نسخہ صلح صفائی

nuskha sulah safai

شوخ لڑکی

shokh ladki

نام

naam

مقدمہ

muqadma

شرم کسے آئے

sharam kaise aaye

بھکاری

bhikari

Your Thoughts and Comments