جیل جانا میرے لیے مطالعاتی دورہ تھا،قتل کے 17ماہ بعد بھی پولیس چالان مکمل نہ کر سکی، مفتی عبد القوی کی پریس کانفرنس

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس بدھ نومبر 12:00

جیل جانا میرے لیے مطالعاتی دورہ تھا،قتل کے 17ماہ بعد بھی پولیس چالان ..
ملتان(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار- 15نومبر 2017ء):ماڈل قندیل بلوچ کے قتل کے ملزم مفتی عبد القوی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ جیل جانا میرے لیے مطالعاتی دورہ تھا،قندیل بلوچ کے قتل کے 17ماہ بعد بھی پولیس چالان مکمل نہ کر سکی۔تفصیلات کے مطابق قندیل بلوچ قتل کیس کے ملزم مفتی عبدالقوی ملتان میں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے ۔

(جاری ہے)

اس دوران مفتی عبد القوی کا کہنا تھا کہ مرحومہ قندیل بلوچ کے قتل کو 17ماہ بیت چکے ہیں اور پولیس ابھی تک چالان مکمل نہیں کر سکی ہے ۔

پولیس چالا ن مکمل کرے گی تو ہمیں خوشی ہو گی ۔انکا کہنا تھا کہ تفتیش میں پوچھے گئے تمام سوالات میڈیا کے سامنے پیش کئیے ۔انکا مزید کہنا تھا کہ جیل جا نا انکے لیے ایک مطالعاتی دورے کی طرح تھا اور انہوں نے محسوس کیا کہ جیل کے قیدیوں کے لیے سہولیات کی فراہمی یقینی بنانے کے لیے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے ۔