میشا شفیع کے علی ظفر پر جنسی ہراسگی کے الزامات کا ڈراپ سین، تمام معاملہ ڈرامہ نکلا

muhammad ali محمد علی جمعرات اپریل 23:49

میشا شفیع کے علی ظفر پر جنسی ہراسگی کے الزامات کا ڈراپ سین، تمام معاملہ ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 اپریل2018ء) میشا شفیع کے علی ظفر پر جنسی ہراسگی کے الزامات کا ڈراپ سین ہوا ہے۔ تفصیلات کے مطابق گلوکارہ میشا شفیع کی جانب سے جمعرات کے روز مشہور و معروف گلوکار علی ظفر پر جنسی ہراساں کرنے کا الزام عائد کیا گیا۔ میشا شفیع نے دعوی کیا کہ علی ظفر انہیں کئی مرتبہ جنسی طور پر ہراساں کر چکے ہیں۔ اس حوالے سے علی ظفر بھی خاموش نہ رہے اور میشا شفیع کے تمام الزامات کو مسترد کردیا۔

علی ظفر نے میشا شفیع کے الزامات کو رد کرتے ہوئے عدالت جانے کا بھی اعلان کیا۔ اب اس تمام معاملے کا ڈراپ سین ہوا ہے۔ میشا شفیع کی جانب سے جنسی ہراسگی کا الزام کا تمام معاملہ ڈرامہ نکلا ہے۔ نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق علی ظفر اور میشا شفیع ایک میوزک ٹی وی شو میں جج کے فرائض انجام دے رہے ہیں۔

(جاری ہے)

ٹی وی شو کی 8 قسطوں کی ریکارڈنگ مکمل ہو چکی ہے، جبکہ 9 ویں قسط کی ریکارڈنگ کے دوران علی ظفر کو پروگرام کا حصہ بنایا گیا۔

تاہم میشا شفیع نے علی ظفر کو پروگرام کا جج بنانے کی شدید مخالفت کی۔ میشا شفیع نے معاوضے کے معاملے پر علی ظفر کو پروگرام کا جج بنانے کی مخالفت کی۔ میشا شفیع نے شو کی انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ جتنا معاوضہ علی ظفر کو ادا کیا جا رہا ہے، اتنا ہی معاوضہ انہیں بھی ادا کیا جائے۔ تاہم شو کی انتظامیہ نے میشا شفیع کا مطالبہ یہ کہہ کر مسترد کر دیا  کہ علی ظفر ان سے کہیں زیادہ مشہور گلوکار ہیں اور ان کا درجہ ایک سپر سٹار کا ہے، اسی لیے انہیں زیادہ معاوضہ دیا جا رہا ہے۔ اس تمام معاملے کے بعد میشا شفیع نے غصے میں شو کی ریکارڈنگ چھوڑ دی اور بعد ازاں ایک ٹوئٹ کے ذریعے علی ظفر پر جنسی ہراساں کرنے کا الزام عائد کردیا۔

متعلقہ عنوان :