کیوبا کی صدارت راؤل کاسترو سے ڈیاز کانیل کو منتقل،نیشنل الیکٹورل کمیشن کا اعلان

کانیل صدارت کے منصب کے لیے واحد امیدوار تھے اور اٴْنہیں خفیہ ووٹنگ کے ذریعے منتخب کیا گیا،بیان

جمعہ اپریل 12:21

ہوانا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 اپریل2018ء) بحیرہ کریبیین کی جزیرہ ریاست کیوبا میں کاسترو خاندان سے باہر نیا صدر منتخب ہو گیا ۔ اس انتخاب کے بعد راؤل کاسترو نے منصب صدارت کو چھوڑ دیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق کیوبا کی اسمبلی نے صدر راؤل کاسترو کے جانشین کے کے طور میگوئل ڈیاز کانیل کو نیا صدر منتخب کر لیا ہے۔وہ صدارت کے منصب کے لیے واحد امیدوار تھے اور اٴْنہیں خفیہ ووٹنگ کے ذریعے منتخب کیا گیا۔

ساٹھ برسوں بعد کیوبا پر کاسترو خاندان سے باہر کا کوئی فرد صدر کے منصب پر فائز ہوا ہے۔کیوبن پارلیمنٹ کے 604 میں سے 603 اراکین نے ڈیاز کانیل کے حق میں ووٹ ڈالا۔ انتخاب کے بعد انہوں نے پارلیمنٹ میں اپنے منصب کا حلف اٹھایا۔ منصبِ صدارت سنبھالنے کے بعد ملکی پارلیمنٹ میں خطاب کرتے ہوئے نئے صدر میگوئیل ڈیاز کانیل نے واضح کیا کہ وہ بدستور انقلاب کے عمل کو آگے بڑھائیں گے اور انقلاب کے علم کو بلند رکھیں گے۔

(جاری ہے)

انہوں نے مزید کہا کہ وہ اپنے ملک کے اندر سماجی و اقتصادی تبدیلیاں ضرور لائیں گے لیکن سب کچھ انقلاب کی روشنی میں کیا جائے گا۔ نئے صدر نے راؤل کاسترو کو انقلاب کا رہنما بھی قرار دیا۔اس انتخاب کے بعد چھیاسی سالہ راؤل کاسترو منصبِ صدارت سے دستبردار ہو گئے ہیں۔ دوسری جانب وہ کیوبا کی حکمران اور طاقتور کمیونسٹ پارٹی کے بدستور سربراہ رہیں گے۔

راؤل کاسترو نے کیوبا کی صدارت سن 2006 میں سنبھالی تھی۔ انقلابی لیڈر فیڈل کاسترو کیوبا پر سن 1959 سے لے کر سن 2006 تک حکمران رہے تھے۔ فیڈل کاسترو منصب صدارت چھوڑنے کے آٹھ برس بعد نوے برس کی عمر میں رحلت پا گئے تھے۔ڈیاز کانیل کی کامیابی کا اعلان نیشنل الیکٹورل کمیشن کی جانب سے بھی کر دیا گیا ہے۔ وہ سن 2013 سے موجودہ صدر راؤل کاسترو کے اول نائب صدر تھے۔

اٹھاون سالہ ڈیاز کانیل کمیونسٹ پارٹی کیوبا کے پولٹ بیورو کے رکن بھی ہیں۔ اسی انتخاب کے دوران پارلیمنٹ نے فرسٹ نائب صدر کے طور پر سلواڈور والدیز میسا کو منتخب کیا ہے۔ کیوبا کی وسیع اختیار کی حامل انتہائی اہم کمیٹی کونسل آف اسٹیٹ کے پانچ نائب صدر ہوتے ہیں۔یہ امر اہم ہے کہ کیوبا کی نیشنل اسمبلی کا دو روزہ خصوصی اجلاس بدھ اٹھارہ سمتبر کو شروع ہوا تھا۔

متعلقہ عنوان :