پھالیہ:14 سالہ آٹھویں کلاس کی طالبہ سے اوباش نوجوان کی زبردستی زیادتی

مقدمہ تاحال درج نہ ہوسکا،بیوہ خاتون کی وزیر اعلی اور چیف جسٹس سے انصاف کی دھائی

پیر اپریل 18:35

پھالیہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) 14 سالہ آٹھویں کلاس کی طالبہ سے اوباش نوجوان کی زبردستی زیادتی،مقدمہ تاحال درج نہ ہوسکا،بیوہ خاتون کی وزیر اعلی اور چیف جسٹس سے انصاف کی دھائی۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق تحصیل پھالیہ میں گزشتہ روز اوباش نوجوان نے آٹھویں کلاس کی 14سالہ یتیم بچی کو زبردستی زیادتی کا نشانہ بنایا ،جس کے بعد دھمکی دی کہ اگر اس نے پولیس کو بتایا تو اس کوجان سے مار دے گا ۔

تھانہ قادر آبادپولیس نے یتیم بچی سے زیادتی کا مقدمہ تھانہ درج تو کرلیا لیکن تاحال ملزمان گرفتار نہ ہو سکے ۔بھیکھو کی بیوہ خاتون نے وزیر اعلی اور چیف جسٹس سے انصاف کی درخواست کردی جبکہ متاثرہ بچی کو میڈیکل کے لئے آر ایچ سی بھیکھو منتقل کردیاگیا جہاں پر میڈیکل میں زیادتی کی تصدیق کردی گئی ہی۔