مسلسل نشست پر بیٹھنے سے امراضِ قلب وذیابیطس کے خطرات بڑھ جاتے ہیں،ماہرین صحت

پیر مئی 11:52

قصور۔7 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) آسٹریلوی ماہرین نے کہاہے کہ مسلسل نشست پر بیٹھے رہنے سے انسان میں امراضِ قلب اورذیابیطس کے خطرات بڑھ جاتے ہیں۔

(جاری ہے)

عالمی ذرائع ابلاغ کیمطابق آسٹریلوی ماہرین نے اپنی ایک جدید تحقیق میں کہا ہے کہ مسلسل نشست پر بیٹھنا کئی نفسیاتی عارضوں کی وجہ بھی بن سکتاہے‘پہلی وجہ یہ ہے کہ کمپیو ٹرسکرین نیند اڑانے کا باعث بنتی ہے اورنیند کی کمی ذہنی تنائوکی وجہ بنتی ہے دوسری وجہ کمپیوٹر پر بیٹھے لوگوں کا رابطہ حقیقی دنیا سے کٹ جاتاہے اور وہ دوستوں اورگھروالوں سے بات نہیں کرتے یوں ان میں ڈپریشن بڑھتاہے تیسری وجہ یہ ہے کہ زیادہ دیر بیٹھنے سے جسم کادورانِ خون سست ہوجاتاہے اور ہارمون درست کام نہیں کرتے اس طرح ذہنی تنائو اور افسردگی بڑھتی رہتی ہے ۔

ماہرین کا خیال ہے کہ اگراب بھی لوگ ورزش نہیں کرتے تو اس کا مطلب یہی ہے کہ وہ جان بوجھ کر اپنا بُراچاہتے ہیں۔ماہرین کے مطابق وقفے وقفے سے کام کے دوران نشست سے اٹھاجائے اور اس طرح خودکومستقبل کے خطرات سے بچایاجائے۔

متعلقہ عنوان :