فلپائینی صدر نے بھری تقریب میں خاتون کے ہونٹ چوم لئے

فلپائنی صدر کا یہ عمل نفرت انگیز اور خواتین مخالف ہے، فلپائنی گبریلا گروپ

منگل جون 15:34

منیلا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 جون2018ء)فلپائن کے صدر روڈریگو نے جنوبی کوریا میں ایک تقریب کے دوران خاتون کو گلے لگایا اور گال پر بوسہ دیا،ہونٹ چوم لئے،گوتریس کے اس عمل کو فلپائن کے گبریلا گروپ نے نفرت انگیز اور خواتین مخالف قرار دیا ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق فلپائن کے صدر روڈریگو دوتیرتے نے جنوبی کوریا میں تقریب کے دوران ایک خاتون کو گلے لگایا اور ان کے گال پر بوسہ دیا جبکہ انھوں نے دوسری خاتون کے ہونٹ چوم لیے جس پر انہیں تنقید کا سامنا ہے۔

فلپائن کے صدر روڈریگو دوتیرتے ایک بار پھر خاتون کے ساتھ اپنے سلوک پر تنازعے کا شکار ہیں۔اس بار ایک لائیو پروگرام کے دوران ایک فلپائن نژاد خاتون کے ہونٹوں پر بوسے کے لیے وہ تنقید کا شکار بنے ۔صدر دوتیرتے جنوبی کوریا کے دورے میں ایک جلسے سے خطاب کر رہے تھے۔

(جاری ہے)

اسی دوران دو فلپائنی خواتین کو صدر کے ہاتھوں ایک کتاب کی جلدیں دیے جانے کے لیے سٹیج پر بلایا گیا جس پر انھوں ایک خاتون کو گلے لگایا اور ان کے گال پر بوسہ دیا جبکہ انھوں نے دوسری خاتون کے ہونٹ چوم لیے ۔

اس غیر متوقع منظر سے لوگوں میں زبردست جوش و خروش نظر آیا جبکہ ان کے جلسے میں زیادہ تر فلپائن نژاد افراد شامل تھے۔صدر نے جس خاتون کا بوسہ لیا تھا اس خاتون نے بعد میں کہا کہ اس میں کوئی بری نیت نہیں تھی جبکہ وہ بوسے سے قبل اور اس کے بعد مسلسل ہنستی ہوئی نظر آئیں۔فلپائن کے گیبریئلا گروپ نے اس عمل کے لیے صدر دوتیرتے کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔اس گروہ نے اس عمل کو 'نفرت انگیز' اور صدر کو 'خواتین مخالف' قرار دیا ہے۔