ْ کاشتکاروں کو موجودہ مرحلہ پر کپاس کی فصل کو کھاد اور پانی کی کمی نہ آنے دینے کی ہدایت

جمعہ جون 12:46

فیصل آباد۔22 جون(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جون2018ء) اگیتی کاشتہ کپاس بھرپورپھول وڈوڈی کے مرحلہ پر پہنچ گئی ہے جبکہ کاشتکاروں کو موجودہ مرحلہ پر فصل کو کھاد اور پانی کی کمی نہ آنے دینے کی ہدایت کی گئی ہے ۔ ماہرین زراعت نے بتایاکہ کپاس کی اچھی پیداوارکیلئے بی ٹی اقسام اگر لائنوں میں کاشت کی گئی ہے تو پہلی آبپاشی بوائی کے 30 سی35دن بعد جبکہ بقیہ آبپاشیاں 12 سے 15دن کے وقفہ سے اور پٹڑیوں پر کاشت کی صورت میں بوائی کے بعد پہلا پانی 3سی4 دن بعد اور بقیہ آبپاشیاں 6 سی9دن کے وقفہ سے کی جائیں ۔

انہوںنے کہاکہ پودے کو پانی کی کمی کی علامات ظاہر ہونے پر ہرصورت پانی دینا چاہیے۔ انہوں نے کہاکہ کاشتکار پانی کے باکفائت استعمال کیلئے ٹینشیو میٹر کااستعمال کریں تاکہ فصل کو ضرورت کے مطابق پانی مل سکے۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ ڈرل سے لائنوں میں کاشت کی گئی چھوٹے قد والی روائتی کپاس کی اقسام کو پہلی آبپاشی بوائی کے 30سے 40دن بعد اور اسی طرح لمبے قد والی کپاس کی ہرآبپاشی 12 سے 15 دن کے وقفہ سے کی جائے ۔

انہوںنے کہاکہ آبپاشی کی کمی والے علاقوں میں متبادل کھیلیوں میں پانی دینے سے بہتر پیداوار لی جاسکتی ہے تاہم اس طریقہ آبپاشی میں تمام کھیلیوںکی نمبرنگ کرنے کے بعد پہلی آبپاشی پر جفت کھیلیوں میں پانی چھوڑاجائے اور طاق کھیلیوں کو بند رکھا جائے اسی طرح دوسری آبپاشی میں صرف طاق کھیلیوں کو پانی دیتے ہوئے جفت کھیلیوںکو بند رکھاجائے ۔ انہوںنے اچھی پیداوار کے حصول کیلئے کھیتوں اور اس کے ارد گرد پائی جانیوالی جڑی بوٹیوں کی تلفی جاری رکھنے کی بھی ہدایت کی ۔

متعلقہ عنوان :