ْبر وقت علاج کر کے جانوروں میں منہ کھر کی بیماری پر قابوپایا جا سکتاہے، ماہرین لائیو سٹاک

پیر جون 13:08

فیصل آباد۔25 جون(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 جون2018ء) لائیو سٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ کے ماہرین نے کہا ہے کہ منہ کھرکی بیماری اگرچہ جانوروں اور مویشیوں کو بہت حد تک جسمانی نقصان پہنچانے کا موجب بن سکتی ہے تاہم بروقت علاج کر کے جانوروں میں منہ کھر کی بیماری پر قابو پایا جا سکتا ہے ۔انہوںنے بتایا کہ منہ کھرجانوروں کی ایک متعدی بیماری ہے جس کا وائرس منہ، معدہ اور کھروں کے درمیان حملہ کر تا ہے ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ بھینسوں اور گائیوں میں زبان ، تالو ، مسوڑھوں اور کھریوں کے درمیان چھالے بن جاتے ہیں اسی طرح بھیڑ بکریوں کے منہ میں سرخ دھبے نمو دار ہونا شروع ہو جاتے ہیں اور رالیں بھی بہنے لگتی ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ اس بیمار ی کی وجہ سے جانور خوراک کھانا بند کر دیتے ہیں اور انہیں تیز بخار ہونے کے علاوہ ان میں دودھ کی کمی بھی واقع ہوجاتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ محکمہ لائیوسٹاک کے پاس منہ کھر کی بیماری سے بچائو کیلئے حفاظتی ٹیکے موجود ہیں لہٰذا مویشی پال حضرات اور کاشتکار اپنے جانوروں و مویشیوں میں منہ کھر کی علامات ظاہر ہوتے ہی قریبی ویٹرنری ہسپتال یا ڈسپنسری سے رابطہ کر یں تاکہ جانوروںکو کسی قسم کی پیچیدگی سے بچایا جا سکے۔

متعلقہ عنوان :