سری لنکا دھماکوں میں ڈینش ارب پتی اپنے تینوں بیٹوں سے محروم ہو گئے

انڈرس کی دولت پانچ ارب 70کروڑ ڈالراور اسکاٹ لینڈ میں دو لاکھ ایکڑ قیمتی اراضی موجود ہے

منگل اپریل 13:07

سری لنکا دھماکوں میں ڈینش ارب پتی اپنے تینوں بیٹوں سے محروم ہو گئے
کولمبو (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 23 اپریل2019ء) یورپی ملک ڈنمارک کی کاروباری شخصیت اور ارب پتی انڈرس ھولش بولسن اتوار کے روز سری لنکا میں ہونیوالے بم دھماکوں میں اپنے تین بیٹوں سے محروم ہوگئے۔عرب ٹی وی کے مطابق انڈرس کو ڈنمارک کا امیر ترین شخص سمجھا جاتا ہے۔ اس کے پاس اسکاٹ لینڈ میں دو لاکھ ایکڑ قیمتی اراضی موجود ہے۔ اس کے علاوہ 'بیسٹ سیلر' کے نام سے ملبوسات کی ایک چین بھی اس کی ملکیت ہے۔

(جاری ہے)

برطانیہ میں’’اسوس‘‘ کے نام سے ایک آن لائن شاپنگ سینٹر چلانے کے ساتھ ملبوسات کاسمیٹک کا بھی کاروبار کرتے ہیں۔عالمی ذرائع ابلاغ نے انڈرس کے ترجمان کے حوالے سے بتایا ہے کہ انڈرس کی دولت پانچ ارب 70کروڑ ڈالرہے۔ اتوارکے روز ان کے تین بیٹے سری لنکا میں ہونے والے دھماکوں میں مارے گئے۔ترجمان کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس انڈرس کے بیٹوں کی موت کے بارے میں مزید تفصیلات نہیں۔ ہم تمام لوگوں سے متاثرہ خاندان کی پرائیویسی کے احترام کا تقاضا کرتے ہیں۔ ڈینش ذرائع ابلاغ کے مطابق انڈرس کا خاندان تعطیلات منانے سری لنکا میں تھا جہاں اتوار کو ہونے والے دھماکوں میں ان کے تین فراد ہلاک ہوگئے۔