Halry Clinton

ہیلری کلسٹن

ہیلری کلسٹن بیچ پر واک کر رہی تھیں ایک لہر آئی: اس کے ساتھ ایک بوتل بھی تھی۔ ہیلری نے اس بوتل کو کھولا۔ تو اس کے اندر سے کالا سا بڑا جن برآمد ہوا اور اس نے کہا ۔”میں جن ہوں میری آقا! “”تم نے مجھے آزاد کیا۔ کوئی بھی ایک خواہش مجھے بتاوٴ میں ابھی پوری کردوں گا۔“ ہیلری بولیں۔ ”مڈل ایسٹ کے مسئلے کا حل بتاوٴ؟“ جن نے کچھ سوچا اور بولا۔”میری آقا! کچھ کام ایسے ہیں جو جن بھی نہیں کر سکتے کوئی اور حکم کریں؟“ اچھا پھر ایسے کرو کہ کلٹن کو میرے ساتھ ہمیشہ کے لئے با وفا کردو۔“ میرا خیال ہے میں ایک نظر مڈل ایسٹ کا نقشہ ہی دوبارہ دیکھ لوں۔ جن نے جواب دیا۔

Your Thoughts and Comments