Maa Ko Salam - Joke No. 842

ماں کو سلام - لطیفہ نمبر 842

دوسرے شہر میں رہنے والے لڑکے نے خط میں اپنی ماں کو سلام دعا کے بعد تاکید کی کہ میرے چھوٹے بھائی کو ایک زور دار تھپڑ رسید کریں کیونکہ اس نے میری پانچ سو والی شرٹ پھاڑ ڈالی تھی۔ پھر اسے بہت پیار کریں کیونکہ اس کے لئے میں جان بھی قربان کر سکتا ہوں۔

مزید لطیفے

نئی سیکرٹری

ni secretary

سیاستدان

siyasatdan

کوڑا

korra

گاڑی لیٹ تھی

Gari late the

خوش حال فقیر

Khush Hal Faqeer

کھانا

khana

اپنی بیوی

Apni Biwi

بازار

Bazar

سسرال کی گھڑی

sasural ki ghari

پہلا دوست

Pehla dost

بازار میں ایک صاحب

Bazaar main aik sahib

بیرا

Bera

Your Thoughts and Comments