Kirayedar - Joke No. 1012

کرایہ دار - لطیفہ نمبر 1012

کرایہ دار نے نصف شب کو مالک مکان کا دروازہ کھٹکھٹایا۔ مالک مکان نیند سے بیدار ہو کر جلدی سے دروازے پر آیا تو کرایہ دار بولا۔ ”میں اس مہینے کا کرایہ نہیں ادا کر سکوں گا۔“ مگر یہ اطلاع دینے کا کون سا وقت ہے تم یہ بات مجھے صبح بھی بتا سکتے تھے۔“ مالک مکان غصہ سے بولا۔ کرایہ دار بولا۔ ” وہ تو ٹھے ہے مگر میں نے سوچا اس پریشانی میں اکیلا کیوں جا گتا رہوں۔“

مزید لطیفے

لکھنوٴ کے ایک مشاعرے میں

lucknow ky aik mushairay main

پروفیسر

professor

ایک دوست دوسرے سے

Aik dost doosre dost se

گاہک دکاندار سے

gahak dukandaar se

بول چال بند

Bol Chal Band

ہمدردی کے دو بول

hamdardi ke do bol

آدم خور

Adam Khor

سینڈوچ

sandwich

پولیس

Police

نیا ڈاکٹر

Naya Doctor

سنہری موقع

sunehri mauqa

کیوں؟

kyun

Your Thoughts and Comments