Maa Aur Hamid - Joke No. 392

ماں اور حامد - لطیفہ نمبر 392

ماں بیٹے کو جھنجھوڑ کر اٹھاتے ہوئے بولیں: ” حامد! جلدی اُٹھو بیٹا‘ اسکول سے دیر ہو رہی ہے“۔ حامد : ” امی! میں اسکول نہیں جاوٴں گا وہاں کوئی مجھے پسند نہیں کرتا بچے مجھ سے نفرت کرتے ہیں استاد میرا مذاق اُڑاتے ہیں۔ اسکول کا سارا سٹاف مجھے نا پسند کرتا ہے“۔ امی جان نے پریشان ہو کر کہا : ” مگر بیٹا! اب تم چالیس سال کے ہو گئے ہو اور اسکول کے ہیڈ ماسٹر ہو تم نہیں جاوٴ گے تو اسکول اسمبلی میں خطاب کون کرے گا“۔

مزید لطیفے

بیوی دکاندار سے

biwi dukandar se

بادشاہ

Badshah

منشی

munshi

تیز گام

tezgam

صحافی

Sahafi

میرا نام اخبار

mera naam akhbar

بیرا

Bera

یونیورسٹی

university

ایک بڑے شہر

aik barray shehar

سکول

school

بد قسمتی

Badqismati

ایک امیر آدمی

Aik ameer admi

Your Thoughts and Comments