Sang Tarash

سنگ تراش

ایک نیا شادی شدہ جوڑا ہوٹل میں ٹھہرا ہوا تھا۔ دلہن غضب کی خوبصورت تھی جیسے چاندنی مجسم ہو گئی ہو اور دولہا اس پر نثار ہو رہا تھا۔ کمرے کی دیواریں پتلی تھیں اور برابر کے کمرے میں دو شہدے قسم کے نوجوان ٹھہرے ہوئے تھے دولہا نے محبت بھرے لہجے میں کہا۔ سوچتا ہوں کہ کراچی سے کسی سنگ تراش کو بلوا کر تمہارا مجسمہ بنواؤں لمحہ بعد انکے کمرے کے دروازے پر دستک ہوئی۔ شوہر نے پوچھا۔ کون؟جواب ملا کراچی کے دوسنگ تراش؟

Your Thoughts and Comments