Shadeed Barish - Joke No. 1486

شدید بارش - لطیفہ نمبر 1486

ایک دن شدید بارش ہو رہی تھی۔ ملا اپنی کھڑکی کھولے تماشا دیکھ رہا تھا کہ ایک آدمی نہایت تیزی سے بھاگا جا رہا تھا۔ ملانے اسے آواز دی اور پوچھا۔ ” اس طرح کیوں بھاگ رہے ہو۔ ؟“ وہ شخص بولا۔ ”دیکھتے نہیں کہ بارش کس شدت سے ہو رہی ہے۔ “ ملانے کہا۔ ”آدمی کو خدا کی رحمت سے اس طرح نہیں بھاگنا چاہیے۔ “ وہ شخص ملا کی اس بات پر مجبور ہو گیا اور نہایت اطمینان سے چل کر گھر پہنچا۔ اس حالت میں وہ پورا اتر بتر تھا۔ دوسرے دن وہی شخص اپنی کھڑکی میں بیٹھا تما شا دیکھ رہا تھا۔ بھی بارش ہلکی ہلکی ہو رہی تھی۔ دیکھا کہ ملا نہایت تیزی سے بھاگا چلا جا رہا ہے۔ اس نے آواز دے کر کہا۔ ”اپنی کل والی بات بھول گئے۔ خدا کی رحمت سے اب کیوں بھاگ رہے ہو؟“ ملانے جواب دیا۔ ”ارے بے وقوف ! کیا تو چاہتاہے کہ رحمت خداوندی میرے پاؤں تلے روندی جائے ؟“

مزید لطیفے

طوطلا آدمی

Totla Admi

کاروبار

Karobar

ایک پادری

Aik padri

پانچ تاریخ

paanch tareekh

گاہک درزی سے

gahak darzi se

سنہری موقع

sunehri mauqa

ایک کنجوس

Aik Kanjoos

قائداعظم

Quaid e Azam

آگ

Aag

ایک خاتون

Aik Khatoon

محنتی عورتیں

Mehnati aurat

اپنی بیوی

Apni Biwi

Your Thoughts and Comments