مسلم لیگ (ن) برطانیہ کا عمران خان کی سابقہ اہلیہ جمائما خان کی رہائش گاہ کے باہر اتوار کو احتجاجی مظاہرہ کرنے کا فیصلہ،تیاریاں شروع

تحریک انصاف نے سیاست میں غلط روایات قائم کر رکھی ہیں ، ا ن کو اگر وزیراعظم کے خلاف مظاہر کرنا تھا تو پاکستانی ہائی کمیشن کے باہر کرتے، حسن نواز کی ذاتی رہائش گاہ کے باہر مظاہرہ غلط روایت ہے،مسلم لیگ (ن) برطانیہ کے سینئر نائب صدر ناصر بٹ کی گفتگو

جمعرات مئی 21:34

مسلم لیگ (ن) برطانیہ کا عمران خان کی سابقہ اہلیہ جمائما خان کی رہائش ..

لندن (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔26 مئی۔2016ء) مسلم لیگ (ن) برطانیہ نے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی سابقہ اہلیہ جمائما خان کی رہائش گاہ کے باہر اتوار کو احتجاجی مظاہرہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے، مظاہرے کی تیاریاں شروع کر دی گئی ہیں، یہ مظاہرہ اس لئے کیا جا رہا ہے کہ گزشتہ روز تحریک انصاف کے کارکنوں نے وزیراعظم کے صاحبزادے حسن نواز کی رہائش گاہ کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا تھا۔

اس ضمن میں مسلم لیگ (ن) برطانیہ کے سینئر نائب صدر ناصر بٹ نے بتایا کہ تحریک انصاف نے سیاست میں غلط روایات قائم کر رکھی ہیں اور انہیں چاہیے تھا کہ اگر انہوں نے وزیراعظم کے خلاف مظاہر کرنا تھا تو وہ پاکستانی ہائی کمیشن کے باہر کرتے، لیکن وزیراعظم کے بیٹے حسن نواز کی ذاتی رہائش گاہ کے باہر مظاہرہ کر کے ایک غلط روایت قائم کی ہے، اسی لئے مسلم لیگ (ن) برطانیہ نے اتوار کو جمائما خان کے گھر کے باہر دوپہر ایک بجے مظاہرہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور وہاں عمران خان سے یہ مطالبہ کیا جائے گا کہ وہ اس بات کا اعلان کریں گے جمائما خان سے علیحدگی کے بعد ان کے گھر آنا جانا غیر اسلامی ہے یا نہیں کیونکہ عمران خان جمائما کے گھر آ کر رہائش اختیار کرتے ہیں اور لندن میں میئر کے الیکشن میں جمائما کے بھائی کیلئے انتخابی مہم چلا کر عمران خان نے یہودی لابی کو خوش کرنے کی کوشش کی تاہم مسلمانوں نے صادق خان کو کامیاب بنا کر عمران خان کی سازش کو ناکام بنایا۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ پانامہ لیکس کی آڑ میں تحریک انصاف یہودی لابی کی پاکستان مخالف سر گرمیوں کو کامیاب بنانا چاہتی ہے جسے محب وطن پاکستانی ناکام بنا دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اتوار کے مظاہرے کیلئے تیاریاں شروع کر دی گئی ہیں اور مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں اور عہدیداروں کو آگاہ اس بارے آگاہ کر دیا گیا ہے۔