حکومت کا کاشتکاروں کی فلاح و بہبود کے اقدامات جاری رکھنے کا فیصلہ، مراعات کی فراہمی کیلئے 43 ارب روپے مختص

چھوٹے کاشتکاروںکیلئے 50 ہزارروپے کے زرعی قرضے پر منافع کی شرح 9.9فیصد کردی گئی

اتوار جولائی 13:00

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جولائی2017ء) وفاقی حکومت نے کاشتکاروں کی فلاح و بہبود اور زرعی شعبے کی ترقی کیلئے مراعات کی فراہمی کے اقدامات جاری رکھنے کا فیصلہ کرتے ہوئے ہ کا شتکاروں کی فلاح و بہبود کیلئے 43 ارب روپے مختص کر دیئے ، زرعی قرضوں کی رقم 700 ارب روپے سے بڑھا کرایک ہزار ارب کردی۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے رواں مالی سال میں کاشتکاروں کی فلاح و بہبود اور زرعی شعبے کی ترقی کیلئے مراعات کی فراہمی کے اقدامات جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

کاشتکاروں کی بہبود کے لئے 43 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں جبکہ زرعی قرضوں کی رقم بھی 700 ارب روپے سے بڑھا کرایک ہزار ارب کردی گئی ہے۔چھوٹے کاشتکاروں کی سہولت کیلئی50 ہزارروپے تک کے زرعی قرضے پر منافع کی شرح بھی کم کرکے نواعشاریہ نو فیصد کردی گئی ہے۔حکومت کے امدادی پیکیج کے تحت زرعی ٹیوب ویلوں کو رعایتی نرخوں پر بجلی فراہم کی جارہی ہے۔