استنبول، عالمی القدس اکنامک کانفرنس ، دفاع القدس کیلئے 10 کروڑ ڈالر پر مشتمل فنڈ قائم

پیر اپریل 18:08

استنبول (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 اپریل2018ء) ترکی کے شہر استنبول میں تین روز تک جاری رہنے والی عالمی القدس اکنامک کانفرنس کے تیسرے روز دفاع القدس کیلئے 10 کروڑ ڈالر پرمشتمل ایک فنڈ کے قیام کا اعلان کردیاگیا ہے۔اطلاعات کے مطابق استنبول میں القدس اقتصادی کانفرنس کا اہتمام فلسطین ۔ ترکی تاجر اتحاد، بیرون ملک مقیم فلسطینی کاروباری شخصیات اور القدس کے حوالے سے کام کرنے والے مختلف اداروں نے مشترکہ طورپر کیا تھا۔

کانفرنس کے اختتام پر انتظامی کمیٹی نے تمام شرکاء ، تاجروں اور صاحب ثروت شخصیات سے مطالبہ کیا کہ وہ القدس کی بہبود اور اس کی تعمیرو ترقی کیلئے القدس فنڈ میں بھرپور حصہ ڈالیں۔اس موقع پر القدس فنڈز کے قیام کا اعلان کیا گیا اور 20 سرکردہ کاروباری شخصیات نے اس فنڈ کیلئے ایک سو ملین ڈالر کی رقم دینے کا عہد کیا ہے۔

(جاری ہے)

اس موقع پر کاروباری شخصیت فاروق الشامی نے 10 ملین ڈالر اگلے پانچ سال تک دینے جبکہ القدس میں زرعی سیکٹر میں معاونت کیلئے 50 ملین ڈالر کی رقم جمع کرکے فنڈ میں شامل کرنے کا یقین دلایا۔

اس کے علاوہ عرب ، اسلامی بنک کی جانب سے القدس میں فلسطینی ا?بادی کے بنیادی ڈھانچے اور سرمایہ کاری کے لیے پچاس ملین ڈالر کا اعلان کیا گیا۔فلسطینی تاجروں نے القدس چیمبرآف کامرس کیساتھ مل کر پرانے بیت المقدس میں 400 دکانوں کو دوبارہ چالو کرنے کے لیے 50 ہزار ڈالر فی دکان دینے کا اعلان کیا۔ یہ رقم 20 ملین ڈالر سے زیادہ بنتی ہے۔

متعلقہ عنوان :