واسا نے زیر زمین پانی کے بے دریغ استعمال کو روکنے کیلئے منصوبہ تیار کر لیا

پانی کا کم استعمال کرنیوالوں کو مراعات دی جائینگی/ ٹیوب لگا کر دینے کے سیاسی نعرے پر عملدرآمد کو روکنا ہوگا‘ ماہرین

اتوار اپریل 11:20

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 اپریل2018ء) واٹر اینڈ سینی ٹیشن ایجنسی ( واسا) نے زیر زمین پانی کے بے دریغ استعمال کو روکنے کیلئے منصوبہ تیار کر لیا ،،پانی کا کم استعمال کرنے والوں کو مراعات دی جائیں گی ۔ ایک رپورٹ کے مطابق جنوبی ایشیاء میں سب سے زیادہ لاہور میں اس وقت فی فرد پانی کی فراہمی 70گیلن ہے جسے کم کر کے 40 گیلن تک لانے کی حکمت عملی طے کی گئی ہے ۔

رپورٹ کے مطابق اس سلسلہ میں گھروں میں میٹرز نصب کئے جائیں گے ۔۔پانی کے 7لاکھ کنکشن ہیں جن میں پچاس ہزار پر میٹر لگائے جا چکے ہیں اور ہدف کے مطابق آئندہ تین برسوں میں تمام کنکشنز پر میٹر زنصب کر دئیے جائیں گے ۔جس کے بعد پانی کے استعمال کے تناسب سے بل وصول کئے جائیں گے جبکہ کم پانی استعمال کرنے والوں کو مراعات بھی دی جائیں۔

(جاری ہے)

آبی ماہرین کے مطابق اگر زیر زمین پانی کے بے دریغ استعمال کو نہ روکا گیا تو آنے والے سالوںں میں صوبائی دارالحکومت کو پانی کی شدید قلت کا سامنا ہوگا ۔

واسا کو ٹیوب ویل کے سیاسی نعرے پر عملدرآمد کو بھی روکنا ہوگا ۔ زیر زمین پانی کو بچانے کے لئے وسیع پیمانے پر مہم شروع کرنے کی ضرورت ہے ۔ ہمیں اپنی آنے والی نسلوں کیلئے پانی کو محفوظ کرنا ہوگا اور اگر پانی کے ضیاع کو روکنے کیلئے قانون سازی کے ذریعے سخت سزائیں اور جرمانے بھی تجویز کرنا پڑیں تو اس میں کوئی خرابی نہیں۔

متعلقہ عنوان :