ْحکومت نہیں گرائیں گے، سپیکروڈپٹی سپیکر کے عہدوں پر انتخاب کیلئے مشاورت جاری ہے،سردار حسین بابک

حکومت کے پاس ممبران کی مطلوبہ تعداد موجود ہی نہیںتو وہ بجٹ کیسے پاس کر سکتی ہی مطلوبہ تعداد موجود ہے تو بجٹ سے قبل ڈپٹی سپیکر کے خالی عہدے کو پر کیا جائے

منگل اپریل 21:50

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 اپریل2018ء) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے واضح طور پر کہا ہے کہ حکومت کے پاس ممبران کی مطلوبہ تعداد موجود ہی نہیں لہٰذا وہ کسی طور بجٹ پاس کر سکتی ،اگر حکومت کے پاس تعداد موجود ہے تو بجٹ سے قبل ڈپٹی سپیکر کے خالی عہدے کو پر کرے ،اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ بجٹ پاس کی خاطر حکومت نے ممبران کے دروازے کھٹکھٹانا شروع کر دیئے ہیں تاہم اپوزیشن اس ناکام ترین حکومت کو نہیں گرائے گی البتہ سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کے عہدوں پر انتخاب کیلئے سنجیدگی سے مشاورت جاری ہے ، انہوں نے کہا کہ حکومت نے پانچ سال اپوزیشن کو دیوار سے لگائے رکھا اور صوبے کے خزانے کو کنگال کر دیا بجٹ پیش کرنے کا شوشہ چھوڑ کر صوبے کے عوام کو بے وقوف نہیں بنایا جا سکتا ، صوبائی حکومت 6 سو ارب روپے کا خسارہ چھوڑ کر آئندہ حکومت کیلئے مشکلات کا پہاڑ چھوڑ کر جا رہی ہے ،3سو ارب کا قرضہ صوبے کے غریب عوام کس طرح ادا کریں گے ،انہوں نے کہا کہ اسمبلی کا اجلاس بلانے سے بھاگنے والی حکومت ممبران کا سامنا نہیں کر سکتی ، انہوں نے کہا کہ سپیکر کو فوری طور پر ڈپٹی سپیکر کے عہدے کا انتخاب کرنا چاہئے ورنہ ان کی اپنی نوکری خطرے میں پڑ سکتی ہے ، صوبے میں آئندہ حکومت بنانے کے دعوے کرنے والی صوبائی حکومت قوم کو وضاحت کرے کہ اسے موجودہ اسمبلی میں کتنی ممبران کی حمایت حاصل ہے ۔

متعلقہ عنوان :