جاپانی شہرناگاساکی کے ناظم کی پوپ فرانسس سے ملاقات

جمعہ مئی 12:06

ویٹی کن۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) ناگاساکی شہر کے ناظم تومی ہیسا تااٴْوئے نے پوپ فرانسس سے ملاقات میں انہیں دعوت دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ جنگ عظیم دوئم کے دوران ایٹمی بمباری کا نشانہ بننے والے دو جاپانی شہروں کا دورہ کریں۔ جاپان کے خبررساں ادارے کے مطابق ناگاساکی شہر کے ناظم تومی ہیسا تااٴْوئے نے جوہری عدم پھیلاؤ کے سمجھوتے کی 2020 میں ہونے والی جائزہ کانفرنس کی تیاری کے لئے منعقدہ اجلاس میں شرکت کے لئے سوئٹزرلینڈ جاتے ہوئے ویٹیکن کا دورہ کیا ہے۔

(جاری ہے)

پوپ فرانسس سے ہونے والی ملاقات میں انہوں نے پوپ کو ایک نجی مراسلہ پیش کیا، جس پر تااٴْوئے اور ہیروشیما کے ناظم کازٴْومی ماتسٴْوئی کے دستخط ہیں۔انہوں نے ایٹمی بمباری کے متاثرہ عمررسیدہ افراد کی دلجوئی کے لیے، پوپ کو ایٹمی بمباری سے متاثرہ شہروں کا دورہ کرنے کی دعوت دی ہے۔مراسلے میں دونوں ناظمین نے پوپ سے کہا ہے کہ وہ جاپانی شہروں سے ایٹمی ہتھیاروں کے خاتمے کا پیغام روانہ کریں۔ واضح رہے کہ پوپ فرانسس نے دعوت نامہ قبول کرتے ہوئے ان شہروں کا دورہ کرنے کی توقع ظاہر کی ہے۔

متعلقہ عنوان :