روہنگیا مسلمانوں کی واپسی کے لیئے فوری اقدامات کئے جائیں، سلامتی کونسل

جمعرات مئی 12:50

نیویارک۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے میانمار پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ روہنگیا مسلمانوں کی واپسی کے لیئے فوری اقدامات کرے ۔ اقوام متحدہ کی جانب سے یہ بیان 28 اپریل سے یکم مئی تک بنگلہ دیش اور میانمار میں کام کرنے والے فیکٹ فائنڈنگ مشن کی واپسی کے بعد سامنے آیا ہے۔

(جاری ہے)

سلامتی کونسل نے میانمار حکومت سے روہنگیا پناہ گزینوں اور ائی ڈی پیزکی رخائن سٹیٹ میں اپنے گھروں کو بحفاظت واپسی اور اس بحران کو حل کرنے کے لئے فوری اقدامات کرنے پر زور دیا گیا ہے۔

اس سے قبلگزشتہ منگل کو چار غیر سرکاری تنظیموں ایچ آر ڈبلیو،، ایمنسٹی انٹرنیشنل،، فورٹیفائی اور گلوبل سینٹر فار رسپانسبلٹی ٹو پروٹیکٹ نے متفقہ طور پر ایک بیان میں عالمی برادری سے برما میں ہونے والے انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے خلاف انٹرنیشل کرمنل کورٹ اپیل دائر کرنے کا مطالبہ کیا تھا ۔ واضح رہے کہ میانمار سے اگست 2017 کو شروع ہونے والے واقعات کے بعد 7 لاکھ سے زیادہ روہنگیا مسلمانوں کو رخائن سے نکال دیا گیا تھا جو بنگلہ دیش اور دیگر ممالک میں پناہ لینے پر مجبور ہوئے۔