صوبائی حکومت کی اولین ترجیح تعلیم کی ترقی ہے ،مشتاق غنی

ہفتہ مئی 21:43

ایبٹ آباد۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) خیبرپختونخوا کے وزیر برائے اعلیٰ تعلیم مشتاق احمد غنی نے کہا ہے کہ ماضی میں میں لوگ مجبوری سے اپنے بچوں کو سرکاری سکولوں میں داخل کرواتے تھے لیکن آج سرکاری سکولوں میں داخلے کے لئے لوگ قطاروں میں کھڑے رہتے ہیں جو کہ ہماری حکومت کی تعلیم دوست پالیسیوں کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سرکاری سکولوں کی اپ گریڈیشن کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

جن میں ایبٹ آباد کے تین اہم سرکاری سکولوں کی اپ گریڈیشن کا افتتاح کیا گیا ۔ اس میں شامل گورنمنٹ ہائی سکول نمبر04جس میں دو اضافی کمرے ، گورنمنٹ ہائی سکول نمبر01کو 19.82ملین روپے اور گورنمنٹ ہائی سکول نمبر03کو 16.44ملین روپے کی لاگت سے ہائیر سیکنڈری لیول پر اپ گریڈ کیا گیا ۔

(جاری ہے)

مشتاق غنی نے کہا کہ 2013میں ہم نے جو وعد ے کئے تھے آج اس کو عملی جامہ پہنا رہے ہیں ، ہماری حکومت کی اولین ترجیح تعلیم کی ترقی ہے کیونکہ تعلیم سے ہی قومیں بنتی اور ترقی کرتی ہیں ،جن معاشروں میں تعلیم ہوتی ہے وہ کبھی بھی ترقی کی دوڑ میں پیچھے نہیں رہتیں ، خیبرپختونخوا میں محکمہ تعلیم 80اور 90فیصد ٹھیک ہو چکا ہے ، محکمہ صحت 70فیصد بہتر ہو چکا ہے ، اسی طرح ہم نے پولیس کو ملک کا مثالی پولیس بنایا ہے اور ایسا تب ہو ا جب ہم نے اداروں کو مضبوط کرکے ان پر سے سیاسی دبائو ختم کیا ۔

مشتاق احمد غنی نے کہا کہ سابقہ حکومتیں سرکاری سکولوں میں زیر تعلیم بچوں کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کرتی رہیں، پانچ چھ کمروں کی عمارت کا نام سکول نہیں بلکہ سکول وہ جگہیں ہیں جہاں ہماری نسلیں شاندار مستقبل کیلئے تعلیم اور تربیت حاصل کرتی ہیں اور پھرملک و قوم کی بھاگ ڈور سنبھالتی ہیں ۔ انہو ںنے کہا کہ موجودہ حکومت کے ختم ہونے میں چند دن باقی ہیں لیکن ہم نے اپنے فرائض پوری ایمانداری اور دیانت داری سے ادا کئے ہیں ہمارے سر فخر سے بلند ہیں اور عوام کے سامنے سراٹھاکر جا سکتے ہیں ۔ مشتاق غنی نے کہا کہ اگر عوام واقعی ترقی اور خوشحالی چاہتے ہیں تو انتخابات میںپی ٹی آئی کاساتھ دیں ۔