وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ناجائز منافع خور سرگرم ،ضلعی انتظامیہ بھی ناجائز نفع خوروں کے سامنے بے بس

جمعہ مئی 18:06

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ناجائز منافع خور سرگرم ضلعی انتظامیہ بھی ناجائز نفع خوروں کے سامنے بے بس دکھائی دینے لگی، روز مرہ اشیاء ضروریہ دودھ، دہی، گھی چاول اور دالوں کے من مانے دام وصول کر نے لگے۔ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی ضلعی انتظامیہ نے ماہ رمضان المبارک کے دوران شہریوں کو اشیاء خوردونوش کی معیاری اور ارزاں نرخوں پر فراہمی کے اقدامات کے تحت نئے نرخنامے جاری کئے ہیں لیکن اسلام آباد کے چھوٹے بڑے تجارتی مراکز محلہ مارکیٹوں اور ریڑھی بانوں نے بھی روزہ داروں کو لوٹنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی ضلعی انتظامیہ کے نرخنامے غائب اور من مانے دام وصول کئے جا رہے یں۔

یکم رمضان المبارک سے نافذ العمل ریٹ لسٹ کے مطابق دودھ فی لٹر 90 روپے، دہی فی کلو گرام 100 روپے مقرر کی گئی ہے لیکن اس کے بر عکس دودھ110روپے فی لٹر اور دہی 120روپے کلو گرام فروخت ہو رہا ہے۔

(جاری ہے)

شہری علاقوں میں چھوٹا گوشت 800 روپے کلو، بڑا گوشت ہڈی والا 330 روپے کلو، بغیر ہڈی بڑا گوشت 450 روپے کلو کے حساب سے فروخت ہو گا جبکہ دیہی علاقوں میں چھوٹے گوشت کی قیمت 750 روپے فی کلو، بڑے گوشت کی قیمت 310 روپے فی کلو، بڑا گوشت ہڈی والا کی قیمت 430 روپے مقرر کی گئی ہے۔

دریں اثناء ضلعی انتظامیہ نے روزمرہ استعمال کی اشیاء خوردونوش جن میں آٹا سرفہرست ہے، 20 کلوگرام تھیلے کی قیمت 720 روپے، اسی طرح دال چنا (موٹی)، دال چنا (درمیانی) کی قیمت بالترتیب 105 روپے فی کلو اور 97 روپے کلو مقرر کی گئیں۔ دال مونگ موٹی، دال مونگ باریک کی قیمت بالترتیب 105 روپے اور 90 روپے، دال مسور موٹی اور باریک کی بالترتیب قیمت 85 اور 72 روپے کلو، دال ماش 110 روپے کلو، بیسن 120 روپے کلو، چاول سپر کرنل (پرانی) 122 روپے کلو، چاول سپر کرنل (نیا) 110 روپے کلو، چاول باسمتی 50 روپے، چاول ٹوٹا 75 روپے، چاول 86، 75 روپے، چاول کائنات 145 روپے، چاول سیلا کی قیمت 148 روپے کلو مقرر کی گئی ہے۔

اسی طرح پکوڑا، جلیبی کی قیمتیں 180 روپے کلو اور سموسہ کی قیمت 156 روپے درجن مقرر کی گئی ہے لیکن ان تمام اشیاء کی قیمتوں میں ناجئز منفع کمایا جا رہا ہے۔۔ ڈپٹی کمشنر کیپٹن (ر) مشتاق احمد نے ہدایت کی ہے کہ تمام اسسٹنٹ کمشنر صاحبان فوڈ کنٹرول اتھارٹی کی قیمتیں، مجسٹریٹس صاحبان نئے نرخناموں پر عملدرآمد کو یقینی بنائیں اور رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں روزہ داروں کو ریلیف فراہم کریں، کسی قسم کی ناجائز منافع خوری کو برداشت نہ کیا جائے اور موقع پر جرمانے اور قانونی کارروائیاں عمل میں لائی جائیں۔

متعلقہ عنوان :