جرمن پادریوں کا فیصلہ،پوپ فرانسس آڑے آگئے

جرمن پادریوں کا شادی سے متعلق فیصلہ کالعدم قرار دے کر فیصلے سے آگاہ کر دیا گیا ، آرچ بشپ لسیس لاداریا

بدھ جون 15:15

پیرس(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) کیتھولک مسیحیوں کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے جرمن پادریوں کے شادیوں سے متعلق ایک فیصلے پر عمل درآمد کو روک دیا ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق کیتھولک مسیحیوں کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے جرمن پادریوں کے شادیوں سے متعلق ایک فیصلے پر عمل درآمد کو روک دیا ہے۔

(جاری ہے)

ویٹیکن کے دینی دفتر کے سربراہ آرچ بشپ لسیس لاداریا نے بتایا کہ جرمن پادریوں کی تنظیم کے سربراہ کارڈینل رائن ہارٹ مارکس کو پوپ کے فیصلے سے مطلع کر دیا گیا ہے۔

جرمن پادریوں نے کیتھولک مذہبی عقائد کے تحت پروٹیسٹنٹ اور کیتھولک جوڑوں کے درمیان شادیوں کو مشروط طور پر جائز قرار دیا تھا۔ رواں برس فروری میں جرمن پادریوں کی تنظیم نے دو تہائی اکثریت کے ساتھ اس تجویز کے حق میں فیصلہ دیا تھا۔

متعلقہ عنوان :