اقتدار شہر میں پانی کا بحران سنگین ہوگیا،شہری پریشان

ٹینکر مافیا سرگرم، 1500سے 3500روپے فی ٹینکر دینے کا انکشاف زیر زمین پانی بھی خطرناک سطح تک نیچے چلا گیا،حکام

پیر جون 19:05

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 جون2018ء) شہر اقتدار میںوفاقی ترقیاتی ادارے ((سی ڈی اے ) اور انتظامیہ کی کاہلی کی باعث پانی کی قلت میں شدید اضافہ ہو گیا ہے اسی باعث نجی ٹینکر مافیا نے بھی اسلام آباد میں پنجے گڑھ لئے ہیں اسلام آباد کے شہری ٹینکر مافیا کو 1500سے 3500روپے فی ٹینکر دینے پر مجبور ہیں دوسری طرف شہریوں نے انکشاف کیا ہے کہ ٹینکرمافیا اکثر گندا پانی سپلائی کرتے ہیں جو نقصان دہ ہے۔

اورپانی کی صفائی کا خیال نہ رکھنے کی وجہ سے شہریوں کا ہسپتال کے چکر لگانا بھی معمول بن چکا ہے ۔تفصیلات کے مطابق وفاقی دارلحکومت اسلام آباد میں پانی کی قلت کی وجہ سے شہری شدید مشکلات کا شکار ہیں۔جبکہ گزشتہ تین سالوں میں کم بارشیوں نے بھی پانی کی قلت میں اضافہ کر دیا ہے۔

(جاری ہے)

دوسری جانب سی ڈی اے اور میونسپل کارپوریشن اسلام آباد کے شہریوں کو پانی پہنچانے میں ناکام ہیں اس بات کا فائدہ اٹھاتے ہوئے نجی ٹینکر مافیا نے بھی اسلام آباد میں پنجے گڑھ لئے ہیں ٹینکر مالکان شہریوں سے من پسند قیمتیں وصول کر رہے ہیں اور شہری انتظامیہ کی جانب سے پانی نہ ملنے پر یہ قیمتیں ادا کرنے پر مجبور ہیں ذرائع نے بتایا کہ اسلام آباد کی 14لاکھ 33ہزار کی آبادی کو پانی فراہم کرنے کیلئے وفاقی ترقیاتی ادارے ((سی ڈی اے )کے صرف 8ٹینکرز زیراستعمال ہیں او ر یہ ٹینکر بھی صرف منظور نظر شخصیات اور سیکٹرز میں پانی میصر کرنے میں استعمال ہوتے ہیں اس بات کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ٹینکر مافیا نے افی ٹینکر 1500سی3500روپے چارج کرنا شروع کر دیئے ہیں آن لائن کے رابطے پر ایک ٹینکر مالک نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ اسلام آباد ہم 5کلو میٹر کی حد میں 1000،10سے 15کلو میٹر میں 1500سے 2000روپے اور 20کلو میٹر کی فاصلے پر 2500سی3500روپے چارج کرتے ہیں اس نے مزید بتایا کہ رمضان المبارک کے دنوں میں سی ڈی اے ٹینکر میصر نہ ہونے کی وجہ سے بجی ٹینکرمالکان نے ٹینکرزکی قیمتیں دگنی کر دی تھی جہاں اسلام آباد کے شہری بوند بوند کو ترس رہے تھے اورپانی کیلئے شہری دگنی قیمتیں دینے کو بھی تیار تھے وہیںٹینکرز اور پانی کی صفائی کاخیال نہ رکھنے کی وجہ سے شہری بیمار یوں کا بھی شکار ہوتے رہتے ہیں تفصیلات کے مطابق ذرادہ تر ٹینکر مافیا بھارہ کہو سے ٹینکر بھرتے ہیں اور شادی بیاہ کی تقریبات پر بھی انہیں بلایا جاتا ہے جبکہ ٹینکر اور پانی کی صفائی پر کوئی خاص توجہ نہیں دی جاتی ٹینکر مافیا کا واحد ہدف پیسے بنانا ہوتا ہے نہ کہ شہریوں کی صحت کی فکر کرنا ۔

سی ڈی اے ذرائع نے بتایا کہ اسلام آباد کی عوام کو روزانہ کی بنیاد پر 120ملین گیلن پانی کی ضرورت ہے جبکہ ((سی ڈی اے )اور انتظامیہ کی جانب سے شہری علاقوں میںبامشکل 58ملین گیلن پانی فراہم کیا جا رہا ہے۔معلوم ہو کہ شہریوں کو پانی فراہم کرنے کیلئے سی ڈی اے اور انتظامیہ سملی ڈیم ،خان پور ڈیم ،اورزیر زمین پانی استعمال کرتے ہیں تاہم گزشتہ تین سالوں میں کم بارشو ں کے باعث سملی ڈیم اور خان پور ڈیم میں پانی کی سطح ڈیڈ لیول کے قریب پہنچ چکی ہے ۔

جبکہ زیر زمین پانی بھی خطرناک سطح تک نیچے چلا گیا ہے ۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ انتظامیہ کی جانب سے جب پانی سپلائی نہیں کیا جائے گاتو ہمیںمجبوراًنجی ٹینکر مافیا کو کئی گناہ قیمت دے کر ٹینکر منگوانے پرتے ہیں تاہم بارشیں نہ ہونے کے باعث بورنگ کا پانی بھی میسرنہیں ہوتاان کا کہنا تھا کہ بعض اوقات پانی نہایت گندا ہوتا ہے اور جب نجی ٹینکر مالکان کو شکایت کی جاتی ہے کوئی توجہ نہیں دی جاتی اور آئے دن بچے اور بزرگ بیمار ہوتے رہتے ہیں اس معاملے پرجب آن لائن نے ڈارئیکٹر واٹرسپلائی نیربٹ سے موقف لینے کی کوشش کی تو ان سے رابطہ نہ ہو سکا ۔