وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے تاجک وزیر دفاع سے ملاقات ، دوطرفہ عسکری تعلقات کی موجودہ نوعیت پر اطمینان کا اظہار

پاکستان اور تاجکستان کا دونوں ممالک میں تجارتی اقتصادی، سفارتی اور توانائی کے شعبوں میں دو طرفہ تعاون کے فروغ پر اتفاق وزیر دفاع کے دورہ پاکستان سے دو طرفہ تعلقات اور عسکری تعاون مزید مستحکم ہو گا، ملاقات میں شاہ محمود قریشی کی بات چیت

جمعرات اپریل 16:44

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے تاجک وزیر دفاع سے ملاقات ، دوطرفہ عسکری ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 11 اپریل2019ء) پاکستان اور تاجکستان نے دونوں ممالک میں تجارتی اقتصادی، سفارتی اور توانائی کے شعبوں میں دو طرفہ تعاون کے فروغ پر اتفاق کرتے ہوئے پاکستان اور تاجکستان کے مابین دوطرفہ عسکری تعلقات کی موجودہ نوعیت پر اطمینان کا اظہار کیا ۔ جمعرات کو تاجکستان کے وزیردفاع جنرل شیر علی میرزو کا وزارتِ خارجہ آمدپر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے خیر مقدم کیا۔

تاجک وزیر دفاع نے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی جس میں دوطرفہ تعلقات ،سیاسی و عسکری تعاون سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ پاکستان، تاجکستان کے ساتھ اپنے دو طرفہ تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے ۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ وزیر دفاع کے دورہ پاکستان سے دو طرفہ تعلقات اور عسکری تعاون مزید مستحکم ہو گا۔

اس موقع پر تاجک وزیر دفاع نے کہاکہ علاقائی امن کیلئے پاکستان کی کوششوں کو سراہتے ہیں ۔ ملاقات میں پاکستان اور تاجکستان کے مابین تجارتی اقتصادی، سفارتی اور توانائی کے شعبوں میں دو طرفہ تعاون کے فروغ پر اتفاق کیا گیا ۔دونوں وزرا نے پاکستان اور تاجکستان کے مابین دوطرفہ عسکری تعلقات کی موجودہ نوعیت پر اطمینان کا اظہار کیا وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے تاجکستان کی سیاسی وعسکری قیادت کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔