Aag - Joke No. 1936

آگ - لطیفہ نمبر 1936

ایک آدمی نے فائرسٹیشن فون کیا اور بولا”دیکھئے میں نے حال ہی میں اپنا باغ سنوارا ہے میں نے اس میں بیش قیمتی پودے لگائے ہیں۔“ ”کیا اس میں آگ لگ گئی ہے۔“دوسری طرف سے پو چھا گیا۔ ”کچھ پودے تو بالکل ہی نایاب ہیں۔ میں نے انہیں بڑی مشکل سے حاصل کیا ہے“ ”دوسری طرف سے بڑی غصے بھری آواز آئی۔”دیکھئے جناب! یہ فائرسٹیشن ہے، گل فروشی کی دکان نہیں۔“ ”معلوم ہے مجھے! ذرا غور سے میری بات سنئیے، میرے پڑوس میں آگ لگ گئی ہے اور میں نہیں چاہتاکہ جب آپ لوگ آگ بجھانے آئیں تو میرے باغ اور پودوں کو نقصان پہنچائیں۔“

مزید لطیفے

خاتون اور شوہر

Khatoon Aur shohar

چار لڑکیاں

chaar larkiyan

کیڑے مکوڑے

Keeray Makoray

ایک شرابی سڑک پر

aik sharabi sarak par

بورڈ کی ہدایت

board ki hadayat

کنجوس سیٹھ سے

Kanjoos seth se

دو وقت کا کھانا مفت

Do Waqt Ka Khana Mufat

پانچ تاریخ

paanch tareekh

عجیب بات ہے

ajeeb baat hai

سیاح کسان سے

Sayyah Kisan Se

ہندوستان کی تقسیم سے

Hindustan ki taqseem se

ایک لڑکا

Aik Larka

Your Thoughts and Comments