Aik Shubdaa Baaz

ایک شعبدہ باز

ایک شعبدہ باز مجمع لگا کر شعبدے رکھا رہا تھا۔ اس نے سو روپے کا نوٹ پکڑ کر سب کے سامنے اپنی جیب میں ڈالا‘ خالی ہاتھ باہر نکالا اور بولا۔ صاحبان! میں نے آپ سب کے سامنے نوٹ جیب میں رکھا ہے مگر آپ میں سے جو چاہیے تلاشی لے لے میری جیب خالی ہے۔ ایک صاحب بولے۔”چھوڑو میاں! یہ شعبدہ تو میری بیوی بھی مجھے کئی دفعہ دکھا چکی ہے۔

Your Thoughts and Comments