Jahazon Ka Ada - Joke No. 1630

جہازوں کا اڈا - لطیفہ نمبر 1630

ایک آدمی بازار سے گزر رہا تھا کہ اس کی نظر ایک عورت پر پڑی۔ جس نے نہایت چست لباس پہنا ہوا تھا۔ عورت کی قمیض پر بہت سے ہوائی جہاز بنے ہوئے تھے۔ پہلے تو عورت خاموش رہی۔ لیکن جب اس نے نہ رہا گیا تو تنگ آکر بولی۔ کیا تم نے کبھی ہوائی جہاز نہیں دیکھے؟ آدمی بولا۔ ”جہاز تو دیکھے ہیں مگر جہازوں کا اڈا نہیں دیکھا۔ “

مزید لطیفے

سیاستدان

siyasatdan

ایک پادری

Aik padri

گھٹنوں کے بل

ghutno ke bal

آثار قدیمہ

Asar e qadima

چپ رہو

chup raho

دو چھڈو

do chadho

ایک مصور

Aik musawir

پینٹ

pant

دو سکھ ریل گاڑی میں

Do sikh rail gari mai

ماں

Maa

چھٹی کی درخواست

chhutti ki darkhwast

مہمان

Mehmaan

Your Thoughts and Comments