Jahazon Ka Ada

جہازوں کا اڈا

ایک آدمی بازار سے گزر رہا تھا کہ اس کی نظر ایک عورت پر پڑی۔ جس نے نہایت چست لباس پہنا ہوا تھا۔ عورت کی قمیض پر بہت سے ہوائی جہاز بنے ہوئے تھے۔ پہلے تو عورت خاموش رہی۔ لیکن جب اس نے نہ رہا گیا تو تنگ آکر بولی۔ کیا تم نے کبھی ہوائی جہاز نہیں دیکھے؟ آدمی بولا۔ ”جہاز تو دیکھے ہیں مگر جہازوں کا اڈا نہیں دیکھا۔ “

Your Thoughts and Comments