Kanjoos Zimidaar - Joke No. 849

کنجوس زمیندار - لطیفہ نمبر 849

کنجوس زمیندار کا رندہ روزانہ اپنی محبوبہ سے ملنے جاتا تو لالٹین ساتھ لے جاتا۔ زمیندار کو بڑا گراں گزرتا کہ وہ اتنا مٹی کا تیل خرچ کر آتا ہے۔ اس کے خیال میں یہ فضول خرچی تھی۔ ایک روز وہ کارندے کو ڈانٹے ہوئے بولا۔ ”ایک تو تم لوگوں میں عقل نام کی نہیں محبوبہ سے ملنے جانے میں لالٹین لے جانے کی کیا ضرورت ہے خواہ مخواہ کی فضول خرچی ہے۔میں جب تمہاری عمر کا تھا تع بغیر لالٹین کے جاتا تھا اور ہماری ملاقات اندھیرے میں ہوتی تھی۔“ بتانے کی ضرورت نہیں کارندہ منہ بنا کر بولا۔ ”مالکن کو دیکھ کر مجھے پہلے ہی اندازہ ہو گیا تھا کہ جوانی میں یہی آپ نے بیوقوفی کی ہو گئی“ اندھیرے میں تو ایسی چیزیں ہی ہاتھ آتی ہیں۔“

مزید لطیفے

ایک سو تین

aik so teen

بڑے آئے سمجھانے والے

barray aaye samjhane walay

ایک آدمی

Aik admi

ایک مینڈک

aik mandak

علی گڑھ

ali garh

”امی“

Ami

آدمی

Admi

ماشاء اللہ ، انشاء اللہ

Mashallah , Inshallah

مریض

Mareez

بھکاری بس سٹاپ پر

Bhikaar bus stop per

دوافیمی

do afeemi

پپو

pappu

Your Thoughts and Comments