Master Sahab - Joke No. 1452

ماسٹر صاحب - لطیفہ نمبر 1452

ماسٹر صاحب نے لڑکوں کو سوال لکھوایا ۔”دل کی شکل بنا کر اس کے کام بتائیں۔ “ ایک لڑکے نے سوال حل کرنے کے بعد کا پی ماسٹر صاحب کو دکھائی ۔ لکھا تھا۔ ”دل ایک نازک چیز ہے۔ یہ لینے دینے کے بھی کام آتا ہے اگر ٹوٹ جائے تو ہر گز نہیں جڑتا۔ اگر کسی کی یاد آجائے تو بہت بیقرار ہو جاتا ہے۔ نیز یہ خون کے آنسو بھی روتا ہے۔ “

مزید لطیفے

ماں بیٹے سے

Maa bete se

ماہر نفسیات

Mahir e Nafsiyat

ایک راہ گیر

Aik rahgeer

پینٹ

pant

بند آنکھوں سے ڈرائیو

band aankhon se drive

قابل ڈاکٹر

qabil doctor

آدم خور

Adam Khor

مالک ملازم سے

Malik mulazim se

چور

Chor

وزیر تعلیم

Wazir e taleem

ماں بیٹے سے

Maa bete se

نئی پرانی نسل

nai purani nasal

Your Thoughts and Comments