Saith

سیٹھ

سیٹھ اعظم کی شہر میں لوہے کی بڑی دکان تھی۔ وہ بڑے مزے سے چار پائی پر لیٹے حقہ کے کش لگا رہا تھا۔ اچانک فون کی گھنٹی نے اسے اٹھنے پر مجبور کر دیا۔ ایک اجنبی آواز ابھری۔ ”ہیلو! آپ کون اور کہاں سے بات کر رہے ہیں؟“ جی میں سیٹھ اعظم ہوں اور آئرن سٹور سے بات کر رہا ہوں۔ میری شہر میں لوہے کی بری دکان ہے اجنبی احتجاجاً بولا۔ ”سیٹھ! ٹھہرےئے پہلے کام کی بات تو ہو جائے پھر تعارف بھی ہو جائے گا۔“ جی فرماےئے بندہ کیا خدمت کر سکتا ہے؟“ سیٹھ صاحب بولے۔ ”آپ کی دکان پر دو فٹ نایاب سریا تو ہو گا؟“ اجنبی نے پوچھا۔ ”جی بالکل ہو گا۔“ تو جلدی سے اپنے کسی ملازم کو بلاےئے اور اسے کہیے کہ وہ سریا ایک دم جلدی سے آپ کے سر میں دے مارے؟ اس سے پہلے کہ سیٹھ جوابی حملہ کرتا اجنبی جلدی سے ریسو رکھ چکا تھا۔

Your Thoughts and Comments