Stage Drama - Joke No. 1632

اسٹیج ڈرامہ - لطیفہ نمبر 1632

اسٹیج ڈرامے کے دوران ایک کارکن دوڑتا ہوا پروڈ یوسر کے پاس پہنچا، پروڈیوسر اس وقت ڈریسنگ روم میں چائے پی رہا تھا، اس نے پوچھا:”کیا بات ہے، اتنے گھبرائے ہوئے کیوں ہو؟“ ”سر! وہ ہیرو نے ولن کو گولی مار دی ، لیکن ولن نے چپکے سے ہاتھ بڑھا کر مجھے یہ چٹ تھمادی ہے۔ “ کارکن نے چٹ پروڈ یوسر کو تھماتے ہوئے کہا۔ اس پر لکھا تھا:”میرے بقایا جات پچھلے پر دے سے مجھے دے جاؤ، ورنہ میں مرنے کے باوجود اٹھکر کھڑا ہو جاؤں گا۔ “

مزید لطیفے

علی گڑھ

ali garh

جارج برنارڈ شاہ

george bernard Shah

الماری

Almari

ایک دفعہ

aik dafa

ایک بے وقوف بول

aik bewaqoof bol

گرم یا ٹھنڈا

garam ya thanda

بادشاہ

Badshah

حفیظ جالندھر

hafeez jalandhar

آپ کے منہ میں

aap ke mun mein

صبح

subah

دیہاتی

dehati

ہمکلام

humkalam

Your Thoughts and Comments