Dhoop Kabhi Na Usy Sokhaye - Puzzle No. 716

دھوپ کبھی نہ اسے سکھائے

dhoop kabhi na usy sokhaye

مزید پہیلیاں

اجلا پنڈا رنگ نہ لباس

Ujla Pinda Rang Na Libaas

کبھی اٹھایا کبھی بٹھایا

Kabhi Uthaya Kabhi Bithaya

ذرا تھپک کر اسے اٹھایا

Zara Thapak Ke Usay Uthaya

گوری ہے یا کالی ہے

Gori Hai Ya Kali Hai

چھوڑا مت تم اس کا ہاتھ

Chodo Mat Tum Uska Hath

اس کے ایک طرف ہے کھال

Uske Aik Taraf He Khaal

منہ میں‌ پڑی رہی اک بوٹی

Munh Mein Pari Rahi Ek Boti

دیکھا ایک ایسا دربار

Dekha Ek Aisa Darbar

اس نے سب کے کام سنوارے

Us Ne Sab Ke Kam Sanwary

بے شک اس کو مارا کوٹا

Beshak Usko Mara Kota

پہلے پانی اسے پلاؤ

Pehly Pani Usy Pilao

موری سے نکلا اک سانپ

Mori Se Nikla Ek Saanp

Your Thoughts and Comments