Ek Khazana Pane Wala - Puzzle No. 622

ایک خزانہ پانے والا

ek khazana pane wala

مزید پہیلیاں

نیچے سے جب اوپر جائے

Neechy Se Jab Oper Jae

کوئی نہ چھین سکے اک شے

Koi Na Cheen Sake Ik Shay

جس شے کو جھولی میں‌ ڈالے

Jis Shai Ko Jholi Me Daly

گوڑا چٹا چاندی جیسا

Gora Chitta Chandi Jaisa

گز بھر کی پانی کی دھار

Ghar Bhar Ki Pani Ki Dhaar

اجلا پنڈا رنگ نہ لباس

Ujla Pinda Rang Na Libaas

سینہ چھلنی رنگت گوری

Seena Chalni Rangat Gori

یقینا وہ بزدل ہے جس نے بھی کھایا

Yaqeenan Wo Buzdil Hy Jis Ny Khaya

ایسا نہ ہو کہ کام بگاڑے

Aisa Na Ho K Kam Bigary

اس کا دیکھا ڈھنگ نرالا

Uska Dekha Rang Nirala

کبھی اٹھایا کبھی بٹھایا

Kabhi Uthaya Kabhi Bithaya

اک برتن دیکھا ہے نرالا

Ek Bartan Dekhna Hai Nirala

Your Thoughts and Comments