پنجاب میں انسداد دہشتگردی فورس بنانے کا لائحہ عمل تیار

ہفتہ اکتوبر 12:00

لاہور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 19اکتوبر 2013ء) ملک میں دہشت گرد کارروائیوں کو روکنے کے لئے خصوصی انسداد دہشت گردی فورس بنانے کی تجویز کے بعد پنجاب میں فورس کی تشکیل کا بنیادی لائحہ عمل تیار کرلیا گیا ہے۔ نجی ٹی وی کے مطابق وزیراعظم میاں نواز شریف نے گزشتہ روز ایک اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت کی جس میں یہ تجویز سامنے آئی ہے کہ انسداد دہشت گردی کے لئے خصوصی فورس کا قیام عمل میں لایا جائے جس کا آغاز ابتدائی طور پر پنجاب سے کیا جائےگا، ذرائع کے مطابق اس فورس کے قیام کے لئے جو تجاویز زیر غور ہیں اس میں اس فورس کے اہلکاروں کی تربیت فوج کے اسپیشل سروسز گروپ کی طرز پر کروانا، پنجاب سے اس فورس میں کل 2 ہزار جوان بھرتی کئے جائیں گے جن کا ابتدائی بیج 500 سے 600 کے درمیان ہوگا، اس میں فوج سے ریٹائرڈ ایس ایس جی کمانڈوز اور دیگر تربیت یافتہ افراد کی خدمات حاصل کی جائیں گی جب کہ ان کی تنخواہ 75 سے 85 ہزار روپے کے درمیان رکھنے کی تجویز بھی زیر غور ہے۔

(جاری ہے)

ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ بھی تجویز زیر غور ہے کہ ملک بھر سے اس فورس کے لئے 8 سے 10 ہزار جوان بھرتی کئے جائیں گے۔ اس تجویز کو حتمی شکل دینے کے بعد اس کا پہلا دستہ 2 ماہ میں اپنی ذمہ داریاں سنبھالے گا اور کسی بھی جگہ دہشت گردی یا کسی اور واقعے پر پہنچنے کی ذمہ داری اسی فورس کی ہوگی۔ ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ بھرتیوں کےلیے اشتہار 31 اکتوبر تک آنے کاامکان ہے بھرتیاں نومبر میں کی جائیں گیں اور پہلا دستہ فروری میں تربیت مکمل کرلے گا۔

متعلقہ عنوان :