نئی دہلی میں 230روہنگیا پناہ گزینوں کا واحد کیمپ جل کر خاکستر ،

ایک شخص زخمی آگ لگنے کی وجہ معلوم نہ ہوسکی،انتہا پسند بھارتی حکومت ایکشن لینے یا افسوس کرنے سے قاصر،کسی کا ردعمل بھی نہیں آیا

پیر اپریل 12:24

نئی دہلی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 اپریل2018ء) بھارت کے دارالحکومت دہلی میں روہنگیا پناہ گزینوں کا واحد کیمپ خاکستر پایا گیا ،واقعے میں کسی کے مرنے کی اطلاع نہیں ہے تاہم ایک شخص کو معمولی زخم آئے ہیں،،بھارتی ٹی وی کے مطابق بھارت کے دارالحکومت دہلی میں روہنگیا پناہ گزینوں کا واحد کیمپ خاکستر پایا گیا ،،دہلی کے کنچن کنچ علاقے میں دو سو سے زیادہ روہنگیا تقریبا 50 جھونپڑیوں میں رہتے تھے جو گزشتہ روز جل کر خاکستر ہو گئی ۔

اس میں کسی کے مرنے کی خبر نہیں ہے البتہ ایک شخص کو زخم آئے ہیں۔۔دہلی کے کیمپ میں آباد روہنگیا کے پاس اقوام متحدہ کی جانب سے جاری کیا ہوا کارڈ تھا جو ایک رضا کار کے مطابق آگ کی نذر ہو گیا ہے،مقامی افراد کے مطابق وہاں صبح تین بجے آگ لگی اوریہ بھی بتایاگیا کہ وہاں 230 سے زیادہ افراد رہتے تھے اور سب کچھ خاک میں مل چکا تھا۔

(جاری ہے)

جھگیوں کا نام و نشان باقی نہیں تھا۔

کولر کے بکسے، بالٹیاں، جلے ہوئے برتن، چھوٹے سلینڈر جیسے دھات کی چیزوں کے علاوہ کچھ نہیں بچا تھا۔ایک مقامی سماجی رضاکار اویس زین العابدین نے بتایا کہ روہنگیا ڈرے ہوئے ہیں اور وہ کھل کر یہ نہیں بتا پا رہے کہ آگ باہر سے آکر کسی نے لگائی ۔ زین العابدین روہنگیا کے معاملے میں سپریم کورٹ میں عرضی گزار بھی ہیں۔ انھیں خدشہ ہے کہ یہ آگ سازش کا نتیجہ ہے۔انہوں نے کہاکہ ان روہنگیا پناہ گزینوں کے پاس باقاعدہ اقوام متحدہ کے کارڈ اور طویل مدتی ویزا بھی ہے لیکن سب اس آگ میں جل کر خاکستر ہو گئے ۔

متعلقہ عنوان :