دہشت گردوں کی ہٹ لسٹ پر موجود شخصیات سے سیکورٹی واپس لینے کا فیصلہ غلط ہے، اسفندیار ولی

ہفتہ اپریل 20:20

دہشت گردوں کی ہٹ لسٹ پر موجود شخصیات سے سیکورٹی واپس لینے کا فیصلہ غلط ..
پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اپریل2018ء) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے اہم سیاسی شخصیات سے سیکورٹی واپس لینے کے فیصلے پر تشویش کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ اے این پی نے ماضی میں اور اپنے گزشتہ دور حکومت میں دہشت گردی کے خلاف اور امن کے قیام کیلئے جدوجہد کی ہے اور اس جنگ میں اپنے ارکان اسمبلی سمیت 850 عہدیداروں و کارکنوں کی جانوں کی قربانی دی ہے جبکہ کبھی بھی دہشت گردی کے سامنے سر نہیں جھکایا اور ہمیشہ ہر میدان میں اس کی مذمت کی ،اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ جن افراد کو ٹارگٹ کرنے کی بار ہا مذموم کوششیں کی جاتی رہیں انہی سے آج سیکورٹی واپس لے لی گئی ہے جو موجودہ حالات کے تناظر میں کسی طور درست فیصلہ نہیں ہے ، انہوں نے کہا کہ جو اہم سیاسی شخصیات دہشت گردوں کی ہٹ لسٹ پر ہیں ان سے سیکورٹی آف کرنے کا فیصلہ درست نہیں ، اسفندیار ولی خان نے کہا کہ ملک میں بسنے والے تمام شہریوں کی جان و مال کا تحفظ حکومت کی ذمہ داری ہے تاہم جن افراد پر کئی بار خود کش حملے ہو چکے ہیں اور وہ ابھی تک دہشت گردوں کے نشانے پر ہیں ان کا تحفظ حکومت کی اولیں ترجیح ہونا چاہئے ، انہوں نے کہا کہ موجودہ نازک صورتحال کا ادراک کیا جائے اور درپیش مسئلے کا احسن طریقے سے حل تلاش کیا جائے ،جن افراد کو یہ مشکل صورتحاال درپیش ہے اگر انہیں کوئی نقصان پہنچا تو پھر ذمہ داری کس کی ہوگی۔

متعلقہ عنوان :