زیادہ توند دل کے دورے کا سبب بن سکتی ہے، امریکی تحقیق

اتوار اپریل 09:50

نیویارک۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 اپریل2018ء) امریکہ میں دو تہائی باشندے زیادہ موٹے یا وزنی ہیں۔عالمی ذرائع ابلاغ کے مطابق اس حوالے سے کئے جانے والے سروے میں یہ حیرت انگیز انکشاف بھی ہوا ہے کہ نارمل جسامت اور مٹاپا رکھنے والے افراد میں بھی بہت سے لوگ ایسے ہیں جن کی توند بہت موٹی ہے اور پیٹ پر کافی چربی چڑھی ہوئی ہے۔ بعض لوگوں کی کیفیت یہ ہے کہ توند کے مٹاپے کی وجہ سے پیٹ کے اندر کے دیگر اعضاء بھی جسم کے اندررہنے والے خطرناک قسم کے مرکب عناصر سے متاثر ہوسکتے ہیں۔

(جاری ہے)

یہ تحقیقی رپورٹ مقامی میو کلینک کے ڈاکٹروں اور سائنسدانوں نے مشترکہ طور پر کی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جو لوگ زیادہ بڑی توند رکھتے ہیں بھلے انکا وزن معمول کے مطابق ہو مگر ان پر دل کے دورے کے امکانات دوسروں کی نسبت زیادہ ہوتے ہیں۔ ایسے لوگوں کوجن کی کمر زیادہ چوڑی ہے ڈاکٹروں سے بلا تاخیر رجوع کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ اس مسئلے پر توجہ دی جائے۔ طبی طور پر بی ایم آئی کا تعلق وزن سے جوڑا جاتا ہے مگر اس کے اندر استثنیٰ بھی موجود ہوتی ہے۔ رپورٹ انٹرنیشنل کلینک ریسرچ سینٹر کی جانب سے جاری کی گئی ہے۔

متعلقہ عنوان :